الجزائری بزنس مین کا ڈنمارک میں نقاب پہننے کی خواہشمند تمام خواتین کا جرمانہ بھرنے کا اعلان

ڈنمارک حکومت نے 6 فروری کو عوامی مقامات پر پورے چہرے کے پردے پر پابندی اور جرمانے عائد کئے تھے۔ تاہم یہ اقدام ابھی تک باقاعدہ منظور نہیں ہوا۔ڈینش پارلیمنٹ کے سامنے رشید نقاظ نے کہا کہ وہ اس سے پہلے بھی چھ ممالک میں 1538 خواتین کے جرمانے بھر چکے ہیں جن میں فرانس، بیلجیئم، سوئیٹرزلینڈ، نیدرلینڈ، آسٹریا اور جرمنی شامل ہے۔

مزید پڑھیں  امریکہ کے اہم شہر مسلسل 6دھماکوں سے گونج اُٹھا،متعدد افراد ہلاک ،متعدد زخمی، حیرت انگیز انکشافات

رشید نقاظ پورے چہرے کا نقاب یا برقعہ پہننے والی خواتین کا جرمانہ بھرنے میں مشہور ہیں اور 2010ء میں فرانس کی پابندی کے بعد مشہور ہوئے تھے۔الجزائری بزنس مین کا ایک ملین یورو فنڈ بنانے کا منصوبہ جو ان جرمانے بھرنے کے لیے استعمال ہو۔

مزید پڑھیں  شام میں داعش کی مدد سے ایران وہ کام کرنے جارہا ہے۔۔۔جس کا کوئی بھی سوچ نہیں سکتا

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments