الیکشن 2018 میں عمران خان کی کن حلقوں میں جیت یقینی ہے؟ سروے کی رپورٹ میں حیران کن انکشاف ہو گیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) عمران خان کے 5 حلقوں میں سے کون سا حلقہ رہے گا عمران کے نام ،کس میں ہو سکتی ہے شکست ،اندر کی خبر آ گئی۔ لاہور ، اسلام آباد اور میانوالی میں انتخابی میدان عمران خانکے نام ہو گا جبکہ کراچی اور بنوں سے چئیرمین تحریک انصاف کو شکست

یہ خبر پڑھیں : پنجاب کا وہ ضلع جس کے تمام حلقوں مں پی ٹی آئی کی جتق ییبک مگر۔۔۔ اس کاما4بی کی اصل وجہ عمران خان نہںو بلکہ کون ہے؟ پارٹی کارکنوں کے لے بڑا سرپرائز آ گاا

یہ خبر پڑھیں : ’’ ہم جانتے ہںی عطاء الحق قاسمی کی تقرری کے پچھے ۔۔۔۔۔‘‘ چئرہمنق پی ٹی وی تعنا0تی کسا مںں چفر جسٹس اور خاتون وکلد کے درماپن تلخ کلامی، خاتون وکلر کے اقدام نے سب کو حرلان کر دیا

مزید پڑھیں  زمین خطرے میں ناسا نے دفاعی منصوبہ بنا لیا مگر کیا ناسا کا منصوبہ کام کرے گا؟ - urdu tv online

کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے، عمران خان لاہور ،اسلام آباد، بنوں اور میانوالی سمیت 5 حلقوں سے الیکشن لڑیں گے۔عمران خان این اے 53، 35، 243، 95 اور 131 سے انتخاب میں حصہ لیں گے۔ان حلقوں میں کہاں کہاں عمران خان کی پوزیشن مضبوط ہے اور کہاں کہاں کمزور ہے تفصیلات سامنے آ گئیں، عمران خان کی سب سے زیادہ مظبوط پوزیشن حلقہ این اے 95 میانوالی میں ہے جہاں سے عمران خان کی فتح کے چانسز 71 فیصد ہیں جب انکے مخالف لیگی امیدوار کی فتح کے چانسز محض 23 فیصد ہیں۔اس کے بعد لاہور کے حلقہ این اے 131 میں بھی عمران خان کو قریبی اور سخت مقابلہ درپیش ہوگا۔ نجی ٹی وی نیوز چینل کے سروے کے مطابق

مزید پڑھیں  اسحاق ڈار میدان میں آگئے۔۔۔کاغذ نامزدگی فیصلے کو چیلنج کردیا

یہ خبر پڑھیں : او سونای نوا آیااے۔۔۔۔مال روڈ کے ساتھ اور کتنا کچھ اس بارش کی نظر ہو گاs کسی کو کانوں کان خبر نہ ہوئی،عمران خان نے شریف برادران کا سب کچا چٹھا کھول کر عوام کے سامنے رکھ دیا ۔۔۔۔

یہ خبر پڑھیں : آج کا سب سے بڑا انکشاف : وہ کونسی نامور خاتون قانون دان ہے جس کے ساتھ شہباز شریف نے 1 سال سے خفہ شادی کر رکھی ہے؟ سنئر صحافی نے تہمنہچ درانی پر بجلاںں گراتے ہوئے بڑی بریکنگ نو ز دے دی

عمران خان کی جیت کے چانسز 48 جبکہ سعد رفیق کے چانسز 47 فیصد ہیں۔اسی طرح این اے 53 میں بھی انکا مقابلہ سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی سے ہے اور اس حلقے میں بھی عمران خان کو شاہد خاقان عباسی کے خلاف واضح برتری حاصل ہو سکتی ہے۔تاہم این اے 35بنوں جہاں عمران خان کا مقابلہ اکرم درانی سے ہے اور کراچی کا حلقہ این اے 243 بھی عمران خان کے لیے ڈراونا خواب ثابت ہو سکتا ہے اور انہیں وہاں سے شکست کا سامنا ہو سکتا ہے ۔یاد رہے کہ این اے 243 میں عمران خان کو پیپلز پارٹی کی شہلہ رضا اور ایم کیو ایم کے خالد مقبول صدیقی کا سامنا کرنا ہوگا۔(ف،م)

مزید پڑھیں  میں خود کو آپ کے سامنے ختم کر دوں گا۔۔۔۔۔۔۔ تحریک انصاف کے اہم ترین رہنما کو خود کشی کی دھمکی مل گئی

دوستوں سے شئیر کریں