ایک اوربڑی شرط عائد ، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی

بیرون ملک جانے والے تمام پاکستانیوں کے لیے اندرون ملک بینک اکاؤنٹ کھولنا لازمی قرار دیئے جانے پرحکومتی غورو غوص شروع ہوگیا ہے. جو افراد بھی اندرون ملک اکاؤنٹ کھلوائیں گے انہیں بیرون ملک سے رقم بھجوانے پر سہولتیں بھی دیئے جانے کا امکان ہے.

اس حوالے سے اسٹیٹ بینک کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر سید عرفان علی کا کہنا ہے کہ اکاؤنٹ ہر اس پاکستانی شہری کو کھلوانا ہوگا جو نوکری کی غرض سے ملک سے باہر جائے گا. فی الوقت یہ لازم نہیں تاہم امکان ہے کہ اگلے برس سے بینک اکاؤنٹ کی شرط لازمی کردی جائے گی.

مزید پڑھیں  نواز شریف کیساتھ میری روحانی طور پر کیا بات چیت ہوتی ہے ؟ نہال ہاشمی نے کیا انکشاف کر ڈالا؟ پاکستانی ششدر رہ گئے

انہوں نے بتایا کہ نجی بینکوں میں یہ اکاؤنٹ کھلوانے والے اوورسیز پاکستانیوں کو بینکوں کی جانب سے مختلف سہولیات فراہم کی جائیں گی، یہ اکاؤنٹ صرف بیرون ملک سے پاکستان رقم منتقلی (ریمی ٹینس) کے لیے استعمال ہوگا جس میں کوئی اور رقم جمع نہیں کرائے جاسکے گی.اسٹیٹ بینک حکام کے مطابق ان اقدامات کا مقصد اوورسیز پاکستانیوں کو بینک اکاؤنٹ کی سہولت فراہم کرکے اس طرف راغب کرنا ہے کہ وہ اپنی رقوم کسی اور ذریعے سے بھیجنے کے بجائے اس قانونی راستے سے وطن منتقل کریں.

مزید پڑھیں  سندھ نے اپنی سرحد پاکستان کے دیگر صوبوں کیلئے بندکرنے کی دھمکی دے دی

..

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments