’تم میرے سے شادی کیوں نہیں کر لیتی‘ سڑک پر چلتی لڑکی سے موٹر سائیکل پر سوار نوجوان کا سوال، انکار کیا تو سب کے سامنے ہی کیا کام کر دیا؟ جان کر ہر شخص لرز اُٹھے

حیدرآباد(نیوز ڈیسک) بھارت میں خواتین کے خلاف جرائم کے درجنوں واقعات ہر روز پیش آتے ہیں لیکن گزشتہ روز حیدرآباد شہر کی ایک سڑک پر سب کے سامنے ایک نوجوان لڑکی کے ساتھ ایسا ظلم ہو گیا کہ دیکھ کر ہر کوئی لرز اٹھا۔دی مرر کے مطابق سندھیہ رانی نامی 24 سالہ لڑکی اپنے دفتر سے چھٹی کے بعد گھر جا رہی تھی کہ موٹر سائیکل پر تعاقب کرنے والا ایک شخص اس کے قریب پہنچا اور کچھ بات کی۔ جب سندھیہ نے اس کی بات سنی ان سنی کر کے اسے نظر انداز کرنے کی کوشش کی تو اس حیوان صفت شخص نے اپنی شرٹ سے تیل کی بوتل نکال کر لڑکی پر تیل چھڑکا اور پھر اسے آگ لگا دی۔ سندھیہ کے لباس نے آن واحد میں آگ پکڑ لی اور چند منٹوں میں ہی وہ سب کے سامنے سڑک پر تڑپ تڑپ کر موت کے منہ میں چلی گئی۔
پولیس کے مطابق یہ بھیانک جرم کرنے والادرندہ صفت شخص 25 سالہ کارتک وانگا ہے جو ایک عرصے سے سندھیہ کے پیچھے پڑا ہوا تھا۔ دو سال قبل تک وہ دونوں ایک ہی دفتر میں کام کرتے تھے لیکن تقریباً ایک سال قبل کارتک کو نوکری سے نکال دیا گیا تھا۔ وہ اس تمام عرصے کے دوران سندھیہ کو ہراساں کرتا رہا تھا اور اس پر دباؤ ڈال رہا تھا کہ وہ اس کے ساتھ شادی کر لے۔ گزشتہ روز بھی اس نے سندھیہ کا تعاقب کیا اور ایک بار پھر اسے شادی کی پیشکش کی لیکن جب اس نے انکار کیا تو تیل چھڑک کر اسے آگ لگا دی۔ بری طرح جھلسنے والی سندھیہ کو قریبی گاندھی ہسپتال لے جایا گیا تھا لیکن اس کا جسم اتنی بری طرح جل چکا تھا کہ کچھ ہی وقت میں وہ تڑپ تڑپ کر دنیا سے رخصت ہو گئی۔

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  50 کروڑ روپے سے بھری وین نالے میں جاگری، گاؤں والوں کی چاندی