جنوبی پنجاب محاذ اور تحریک انصاف کے رہنماؤں کے درمیان ملاقات۔۔۔کیا کچھ طے پا گیا؟ (ن) لیگ کی صفوں میں ابتری پھیلا دینے والی خبر آ گئی

لاہور(ویب ڈیسک)جنوبی پنجاب محاذ اور تحریک انصاف کے رہنماؤں کے درمیان لاہور میں ملاقات ہوئی۔ ملاقات کے بعد شاہ محمود قریشی نے لاہور میں جنوبی پنجاب صوبہ محاذ کے رہنما خسرو بختیار کے ہمراہ پریس کانفرنس کی۔پاکستان تحریک انصاف کے نائب چیئرمین شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن


نے جنوبی پنجاب کے لوگوں میں احساس محرومی کو ہوا دی، مختلف سیاسی جماعتوں کے اتحاد سے ملک میں نیا صوبہ ضرور بنے گا۔شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ خسرو بختیار کا اصل مقام پی ٹی آئی ہی ہے۔ اس موقع پر اعلان کیا گیا کہ پیر کو دن گیارہ بجے جنوبی پنجاب کو صوبہ بنانے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں پیش کی جائے گی۔دوسری جانب تحریک انصاف کے ترجمان فواد چوہدری نے دو اہم شخصیات کی پارٹی میں شمولیت کا دعویٰ کیا ہے جب کہ شیخوپورہ سے مسلم لیگ (ن) کے باغی ایم این اے بلال ورک تحریک انصاف میں شامل ہوچکے ہیں۔یاد رہے کہ 9 اپریل کو پریس کانفرنس کے دوران مسلم لیگ (ن) کے 6 قومی اور 2 ارکان صوبائی اسمبلی نے مستعفی ہوکر پارٹی چھوڑنے کا اعلان کیا تھا۔رکن قومی اسمبلی خسرو بختیار نے جنوبی پنجاب صوبہ محاذ بنانے کا اعلان کرتے ہوئے بتایا تھا کہ بلخ شیر مزاری اس محاذ کے سرپرست ہوں گے۔نئے صوبے کی تحریک میں طاہر اقبال، رانا محمد قاسم، باسط بخاری، سردار دریشک، چوہدری سمیع اللہ، سلیم اللہ چوہدری اور طاہر بشیر چیمہ بھی شامل ہیں۔یاد رہے عام انتخابات 2018 سے قبل مختلف سیاسی جماعتوں کے ارکان کی وفاداریاں تبدیل کرنے

مزید پڑھیں  بھارت کا پنجاب کے آبادی والے شہر پر حملہ ،پاک فوج میں ہل چل مچ گئی ،کئیں شہادتیں

کا سلسلہ جاری ہے اور ایسے میں حکمران جماعت مسلم لیگ (ن) کے 6 قومی اور 2 ارکان صوبائی اسمبلی نے مستعفی ہوکر پارٹی چھوڑنے کا اعلان کردیا۔لاہور میں پریس کانفرنس کے دوران مسلم لیگ (ن) کے رہنما خسرو بختیار نے قومی اسمبلی کی رکنیت سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا جب کہ ساتھ ہی انہوں نے مسلم لیگ (ن) کے 6 ارکان قومی اسمبلی اور 2 ممبران صوبائی اسمبلی کے استعفوں کی تصدیق کی۔مستعفی ہونے والوں میں طاہر اقبال، رانا محمد قاسم، باسط بخاری، سردار دریشک، چوہدری سمیع اللہ، سلیم اللہ چوہدری اور طاہر بشیر چیمہ شامل ہیں۔جنوبی پنجاب صوبہ محاذ بنانے کا اعلان۔خسرو بختیار نے جنوبی پنجاب صوبہ محاذ بنانے کا اعلان کرتےہوئے بتایا کہ سابق وزیراعظم بلخ شیریں مزاری اس محاذ کے سرپرست ہیں۔پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے خسرو بختیار نے کہا کہ پریس کانفرنس کا مقصد وفاق کومضبوط اورنئے صوبے کے قیام کا اعلان ہے، ہمارا یک نکاتی ایجنڈا ہے جو جنوبی پنجاب صوبہ بنانا ہے، جنوبی پنجاب کے عوام اور کئی اہم سیاستدان ہمارے ساتھ ہیں۔انہوں نے کہا کہ پچھلے 30 برس سے جنوبی پنجاب کے عوام غربت اور جہالت کا شکار رہے، جنوبی پنجاب میں غربت کی شرح 51 فیصد ہے اور یہاں کے عوام بیروزگاری کے عفریت سے لڑرہے ہیں۔خسرو بختیار کا کہنا تھا کہ ہمیں وسائل کی منصفانہ تقسیم بھی نہیں مل رہی، ہمیں وسائل کی منصفانہ تقسیم چاہیے۔(ذ،ک)

مزید پڑھیں  بجلی کی لوڈشیڈنگ سے پریشان ۔۔۔عوام کےلئے بڑی خوشخبری آگئی


دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments