خادم حسین نے قصور واقعے کا ملزم کس کو ٹھرایا؟ میڈیا حیران رہ گئی

قصور (نیوز ڈیسک) امیر المجاہدین خادم حسین رضوی گذشتہ روز قصور واقعہ کے خلاف احتجاج میں پولیس کی فائرنگ سے شہید ہونے والے 18 سالہ شعیب اسلام کی نماز جنازہ پڑھانے قصور گئے تو وہاں میڈیا سے بات کرتے ہوئے سیخ پا ہو گئے ۔ یہی نہیں بلکہ ننھے بچوں سے بد فعلی کی ذمہ داری بھی ٹی وی پر عائد کر دی۔ میڈیا سےبات کرتے ہوئے خادم حسین رضوی نے کہا کہ لوگوں کو فحاشی پر اُبھارنے کا ذمہ دار کون ہے؟ کس نے بچیوں کو نیم برہنہ کر کے ٹی وی پر چلایا ہے؟ کس نے لوگوں کے جذبات اُبھارے ہیں؟ کس نے ایسی فلمیں بنائیں؟ ہر انسان کو فحاش میڈیا اور ٹی وی نے بنایا ہے۔میڈیا خادم حسین رضوی سے سوال کرتا رہا اور وی سیخ پا ہو کر بولتے رہے جس پر میڈیا اور خادم حسین رضوی میں تلخ کلامی ہو گئی۔
دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے ایک اور معصوم فلسطینی شہید