سرفراز احمد نے تما م ٹیموں کے کپتانوں کو پیچھے چھوڑ دیا، اعزاز بھی اپنے نام کر لیا

لاہور(نیوزڈیسک)پاکستان اور بھارت کی کرکٹ ٹیمیں جب بھی میدان میں اترتی ہیں تو دونوں ممالک کے مداح اپنی اپنی ٹیمو ں کو سپورٹ کرنے کے لیے آخری حد تک جانے کےلئے تیار ہوجاتے ہیں ۔ ایک جانب جہاں بھارتی ٹیم نے ویرات کوہلی کی قیادت میں 2017ءمیں ون ڈے کرکٹ میں عمدہ کھیل پیش کیا ہے وہیں قومی ٹیم نے سرفراز احمد کی قیادت میں سب کو حیران کرتے ہوئے چیمپئنز ٹرافی کا ٹائٹل پہلی مرتبہ اپنے نام کیا ۔سابق آسٹریلوی اوپنر میتھیو ہیڈن ، سابق سری لنکن آل راؤنڈر رسل آرنلڈ اور سابق بھارتی بلے باز وی وی ایس لکشمن کو ویرات کوہلی ، اے بی ڈیویلیئرز ، این مورگن اور سرفراز احمد میں سے 2017ءکا بہترین ون ڈے قائد چننے کا کہا گیا ، رسل آرنلڈ نے سرفراز احمد اور میتھیو ہیڈن نے ویرات کوہلی کے حق میں ووٹ دیا جس کے بعد ساری نظریں وی وی ایس لکشمن کی طرف مرکوز ہوگئیںجنہوں نے فوری طور پر سرفراز احمد کا نام لیتے ہوئے کہا کہ جس طرح انہوں نے اپنی قائدانہ صلاحیتوں کے بل بوتے پر چیمپئنز ٹرافی جتوائی ،وہی 2017ءکے بہترین کپتان کھلائے جانے کے حق دا ر ہیں ۔بطور بلے باز ویرات کوہلی ،سرفراز احمد سے بہت آگے ہیں تاہم اگر کپتانی کی بات کی جائے تو جہاں کوہلی نے رواں سال 26ون ڈ ے میں سے 19میں کامیابی حاصل کی اور ان کی کامیابی کا تناسب08 73.فیصد رہا وہیں سرفراز احمد نے رواں سال 13ون ڈے میچز میں سے 11جیتے اور ان کی جیت کا تناسب84.62فیصد رہا ۔جب سال کے بہترین کپتان کی بات کی جائے تو آئی سی سی ایونٹس میں کاکردگی کو سب سے زیادہ اہمیت دی جاتی ہے اور جس طرح سرفراز احمد نے چیمپئنز ٹرافی کے فائنل میں بھارت کو عبرتناک شکست سے دوچار کرکے ٹائٹل جیتا اس کے بعد ان کے علاوہ کوئی او ر کپتان رواں سال کا بہترین قائد کہلائے جانے کا حق دار نہیں ہے ۔
دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  آپ لوگ منی ٹریل کیوں نہیں دے رہے ؟ کمرہ عدالت میں صحافی کے مریم نواز سے سخت سوالات، دیکھئے مریم نے کیا جواب دیا ؟