سکھر کے ہسپتال میں لائی گئی خاتون کے ساتھ ڈاکٹروں نے ایسا کام کردیا کہ خاتون اور نومولود دونوں ہی جان کی بازی ہار گئے

urdu tv online

 سکھر کے سول ہسپتال میں ایک خاتون کو انتہائی تشویشناک حالت میں لایا مگر ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل سٹاف کی ہڑتال کی وجہ سے کسی نے بھی اس خاتون کی طرف توجہ نہیں اور مسیحاﺅں کی مبینہ غفلت اور لاپرواہی کی وجہ سے خاتون اور اس کا نومولود بچہ دونوں جان کی بازی ہار گئے۔ غوث پور کے ڈاکٹرز نے  نواحی گاﺅں سید محمد شاہ بھڑو کی رہائشی روز خاتون کی تشویشناک حالت کی وجہ سے آپریشن کے لئے  فوری طور پر سکھر لے جانے کا کہا مگر جب خاتون کو سول ہسپتال لایا گیا تو کوئی ڈاکٹر اور نرس موجود نہیں تھی ، ہڑتال ہونے کی وجہ سے کسی بھی ڈاکٹر نے خاتون کی جانب توجہ نہیں دی جس کی وجہ سے روز خاتون اور اس کا بیٹا دونوں جاں بحق ہوگئے۔خاتون کے لواحقین نے صوبائی وزیر صحت اور دیگر ذمہ دار افراد سے ان ڈاکٹرز کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے جنہوں نے زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا خاتون کی دیکھ بھال نہیں کی اور وہ جان کی بازی ہار گئی۔

مزید پڑھیں  ’’ان ساتھوں کو پھانسی دی جائے کیونکہ یہ وہ لوگ ہیں جو ۔۔۔‘‘آرمی چیف نے ساتھ دہشت گردوں کو پھانسی پر لٹکانے کا حکم جاری کر دیا۔

واضح رہے کہ سکھر کے گورنمنٹ انور پراچہ ہسپتال اور سول ہسپتال کے ڈاکٹر گذشتہ پانچ دنوں سے انور پراچہ ہسپتال کے میڈیکل سپریٹنڈنٹ ڈاکٹر احمد اقبال کی گرفتار ی کے خلاف سراپا احتجاج ہیں ، اس احتجاج کی وجہ سے روازنہ سینکڑوں مریض خوار ہو رہے ہیں۔

مزید پڑھیں  رانا ثنا نے شریف خاندان میں پھوٹ ڈال دی نواز شریف اور شہباز شریف میں اختلافات سامنے آگئے

 

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments