شیخ رشید استعفیٰ کیوں دے رہے ہیں۔۔۔ سپیکر ایاز صادق نے انتہائی اہم بیان دے دیا

اسلام آباد (نیوزڈیسک) سینئر کورٹ رپورٹر عبدالقیوم صدیقی نے دعویٰ کیا ہے کہ شیخ رشید کے جلسے میں استعفیٰ کے اعلان کو سپیکر قومی اسمبلی نے زیادہ ہی سنجیدہ لے لیاہے اور اب وہ فون کال پر ان کے استعفیٰ کی تصدیق کرنے والے ہیں، اگر ایسا ہوتا ہے تو یہ اپنی نوعیت کا منفرد واقعہ ہوگا۔ٹوئٹر پر عبدالقیوم صدیقی نے اپنے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا کہ اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد سے فون رابطہ کریں گے اور ان سے پوچھیں گے کہ انہوں نے عوامی جلسے میں استعفیٰ دینے کا جو اعلان کیا ہے کیا وہ اس کی تصدیق کرتے ہیں ۔ ’اگر شیخ رشید نے تصدیق کردی تو شیخ رشید کو اس سال دو الیکشن لڑنے پڑیں گے‘۔ذرائع نے دعوی کیا ہے اسپیکر قومی اسمبلی سے فون رابطہ کریں گے کہ انہوں نے عوامی جلسے میں استعافا دینے کا جو اعلان کیا ہے کیا وہ اس کی تصدیق کرتے ہیں اگر شیخ رشید نے تصدیق کردی تو شیخ رشید کو اس سال دو الیکشن لڑنے پڑیں گے واضح رہے کہ لاہور میں اپوزیشن کے چیئرنگ کراس جلسے کے دوران شیخ رشید احمد نے استعفیٰ دینے کا اعلان کیا تھا، اگر عبدالقیوم صدیقی کے ذرائع درست ثابت ہوئے تو یہ اپنی نوعیت کا منفرد واقعہ ہوگا کیونکہ اس سے قبل 2014 میں پی ٹی آئی نے جب استعفے دیے تھے تو سپیکر سردار ایاز صادق نے انہیں قبول کرنے سے انکار کردیا تھا اور وہ بضد رہے کہ استعفیٰ دینے والے ارکان فرداً فرداً آکر اپنے استعفوں کی تصدیق کریں۔ اسی طرح ایم کیو ایم کے استعفوں کے معاملے پر بھی سپیکر ایاز صادق نے استعفے قبول نہیں کیے تھے۔ایم کیو ایم نے کراچی میں شدت پسندوں کے خلاف جاری آپریشن میں اپنی جماعت کے ارکان کی مبینہ طور پر ٹارگٹ کلنگ اور گرفتاری کے خلاف 22 اگست 2015کو سینیٹ، قومی اسمبلی اور سندھ اسمبلی سے استعفے دے دیے تھے تاہم ان کے استعفے منظور نہیں کیے گئے تھے۔
دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  میں پاکستان کی پہلی آرمی چیف بننا چاہتی ہوں۔۔۔لڑکی کا تعلق کس خاندان سے :جانئے