عدالت سے شاہزیب قتل کیس بارے بڑا فیصلہ جاری ہوگیا۔۔۔تفصیلات جانئے

urdu tv online

کراچی (نیوزڈیسک) شاہزیب قتل کیس میں مقتول کے والد اورنگزیب خان نے عدالت میں صلح نامہ جمع کراتے ہوئے کہا کہ انہیں ملزمان کی ضمانت پر رہائی پر کوئی اعتراض نہیں ہے جس کے بعد عدالت نے تینوں ملزمان کی پانچ پانچ لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکوں کے عوض ضمانت منظور کرلی۔شاہزیب قتل کیس کی از سر نو سماعت سیشن جج جنوبی کی عدالت میں ہوئی، دورانِ سماعت مقتول شاہزیب کے والد اورنگزیب خان عدالت میں پیش ہوئے اور صلح نامہ جمع کرایا۔ انہوں نے عدالت کو بتایا کہ بیٹے کے قتل کے بعد ان کی ملزمان کے اہل خانہ سے صلح ہوگئی تھی ، ملزمان کو اللہ کی رضا کیلئے اپنے بیٹے کا خون معاف کیا ہے، اگر عدالت کی جانب سے ملزمان کو ضمانت پر رہا کیا جاتا ہے تو اس پر انہیں کوئی اعتراض نہیں ہے۔ صلح نامہ ملنے کے بعد عدالت نے ملزمان کی ضمانت سے متعلق فیصلہ منظور کرلیا جو تھوڑی دیر بعد سنایا گیا۔سیشن عدالت نے اپنے فیصلے میں ملزمان شاہ رخ جتوئی، سراج تالپور اور سجاد تالپور کی ضمانت کی درخواستیں منظور کرتے ہوئے انہیں 5،5 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم دے دیا۔ اس کے علاوہ ملزم شاہ رخ جتوئی کی غیر قانونی اسلحہ کے کیس میں بھی ایک لاکھ روپے میں ضمانت منظور کرلی گئی ہے، ملیر کورٹ میں چلنے والے مقدمے میں بھی ملزم کی ضمانت پہلے ہی منظور ہوچکی ہے۔ تینوں کیسز میں ضمانتیں منظور ہونے پر ملزم شاہ رخ جتوئی کی آج ہی رہائی کا امکان ہے۔واضح رہے کہ 2012 میں مقتول شاہزیب نے ملزم شاہ رخ جتوئی کو اپنی بہن کے ساتھ بد تہذیبی کا مظاہرہ کرنے سے روکا تھا جس پر دونوں میں تکرار ہوئی اور ملزم نے نوجوان کو فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا۔
دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  شیریں مزاری کی بیٹی ایمان زینب نے بھی بچپن میں جنسی طور پر ہراساں کیا جانے کا انکشاف کر دیا