عمران خان شادی کی تیاری کریں۔۔ ماہر علم نجوم نے کپتان کو بڑی خوشخبری سنادی

لاہور (نیوزڈیسک) معروف ماہر علم نجوم ماموں، سامعہ خان اور عالیہ نذیر نے 2018ءکو عمران خان کی شادی کا سال قرار دیدیا ہے لیکن ’ماموں‘ نے اس کیساتھ ہی انہوں نے ایسا دعویٰ بھی کر دیا ہے کہ جان کر تحریک انصاف کے کارکنان نئے سال کی خوشیاں ہی بھول جائیں گے جبکہ ریحام خان بے اختیار کہہ اٹھیں گی ”یہ نہیں ہو سکتا۔“نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کے دوران میزبان محمد مالک نے سامعہ خان سے عمران خان کی شادی سے متعلق پوچھا تو انہوں نے کہا کہ ”عمران خان کا ستارہ 100 فیصد ان کی شادی کی نوید سنا رہا ہے۔ 10 اکتوبر 2017ءسے وہ وقت شروع ہو چکا ہے اور پی ٹی آئی والوں کیلئے خوشخبری ہے کہ اب جو بھی بھابھی آئے گی وہ مستقل آئے گی اور ایک مستحکم تعلق قائم ہو گا، عمران خان کو کسی منصب سے پہلے دولہا کی شیروانی والی خوشی ضرور ملے گی۔ چونکہ ان کی شادی کا وقت گزشتہ سال 10 اکتوبر سے شروع ہو چکا ہے اس لئے یہ شادی اس سال کسی بھی وقت ہو سکتی ہے لیکن اب عمران خان کا کوئی سکینڈل نہیں آئے گا اور جو بھی نئی دلہن ہو گی وہ گھر بسانے والی آئے گی، میں عمران خان سے درخواست کروں گی کہ اپنی قسمت کے فیصلے کا اعلان کر دیں کیونکہ یہ بہت مبارک گھڑی ہے۔“ اس کے بعد عالیہ نذیر کو بولنے کا موقع ملا تو انہوں نے بھی 2017-18ءکو عمران خان کی شادی کا سال ہی قرار دیا لیکن اس کیساتھ ہی یہ خدشہ بھی ظاہر کیا کہ اگرچہ عمران خان کا ستارہ بہت بڑا ہے مگر شادی کے معاملے میں قسمت ان کا ساتھ نہیں دیتی۔ میرے نزدیک ان کی شادی اتنی قریب ہے کہ ایسا بھی محسوس ہوتا ہے کہ شائد ان کی شادی ہو چکی ہے، ہو سکتا ہے کہ ابھی نکاح ہی ہوا ہو۔محمد مالک نے موقع دیا ’ماموں‘ کو بولنے کا جنہوں نے حیران کن دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ ان کے حساب کے مطابق عمران خان کی شادی دوبارہ ریحام خان سے ہو گی۔ ماموں نے کہا کہ ”گزشتہ سال اکتوبر سے ان کی شادی کا وقت شروع ہو چکا ہے اور اس دوران ان کی شادی ہو جانی چاہئے تھی، شائد ہو بھی گئی ہو، میرا ایک اندازہ ہے کہ ان کی شادی دوبارہ ریحام خان کیساتھ ہی ہو گی۔’ماموں‘ کی جانب سے ایسا دعویٰ سامنے آنے پر سامعہ خان اور محمد مالک بھی حیران پریشان رہ گئے۔ محمد مالک نے برجستہ جواب دیتے ہوئے کہا کہ ”نہ کریں یار، کیا کر رہے ہیں، آپ تو دل ہلانے والی بات کرتے ہیں۔
دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  ڈر ہےکہ شریفوں کا مصنوعی ترقی کا بم تباہی نہ پھیلا دے،آصف زرداری نے تنقید کے تیر برسادیئے