عمران خان صادق اور امین ۔۔۔معاملہ ایک دفعہ پھر عدالت پہنچ گیا

اسلام آباد(نیوزڈیسک ) سپریم کورٹ کی جانب سے عمران خان کو صادق و امین قرار دئیے جانے کے فیصلے کے خلاف نظر ثانی کی اپیل دائر کر دی گئی میڈیا رپورٹس کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے رہنما حنیف عباسی نے عمران خان کو صادق و امین قرار دینے کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں نظرثانی اپیل دائر کر دی ہے۔ درخواست میں عمران خان کو فریق بنایا گیا ہے۔درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ عمران خان نے بنی گالہ میں اپنی اہلیہ کے نام جائیداد بے نامی خریدی۔ انہوں نے جمائمہ سے لیا گیا قرض تسلیم کیا لیکن اس قرض کو کاغذات نامزدگی میں ظاہر نہیں کیا، آف شور کمپنی عمران خان کا اثاثہ تھا لیکن انہوں نے اسے بھی کاغذات نامزدگی میں ظاہر نہیں کیا، عمران خان نے عدالت کے روبرو جھوٹ بولا، وہ آئین کے آرٹیکل 62 ون ایف پر پورا نہیں اترتے۔ عدالت نے مقدمے کی سماعت کے دوران بھی عمران کے کنڈیکٹ کو نہیں دیکھا۔ اس لئے عمران خان کو صادق و امین قرار دینے کے فیصلے پر نظرثانی کی جائے اور الیکشن کمیشن کو پی ٹی آئی کے 5 سال کے اکاونٹ چیک کرنے کا حکم بھی کالعدم قرار دیا جائے۔دائر درخواست میں سپریم کورٹ سے استدعا کی گئی ہے کہ عمران خان کے پارٹی فنڈنگ کے حوالے سے سرٹیفکیٹس کو جھوٹا قراردیا جائے، وفاقی حکومت کو پی ٹی آئی کے خلاف فارن فنڈنگ پر کارروائی کا حکم دیا جائے۔
دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  چیئر مین پی ٹی وی تقریری کیس : عطا الحق قاسمی کو 2 برس میں 27 کروڑ دئیے ، کیونکہ رقم سابق وزیر اعظم سے لی جائے:چیف جسٹس