عوام فیصلہ کریں انہیں میٹروبس چاہیے یا مفت علاج؟بلاول

حیدرآباد ویب ڈیسک :پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹوزرداری نے کہا ہے کہ فیصلہ عوام کو کرنا ہے کہ انہیں میٹرو بس چاہئے، درخت چاہئیں یا مفت علاج کے لئے اسپتال چاہئیںجبکہ وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہاہے کہ کراچی کے اسپتالوں میں صرف سندھ کے نہیں ملک بھر سے آنے والے مریضوں کا مفت علاج کیا جاتا ہے۔پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹوزرداری اور وزیراعلیٰ سندھ نے اتوارکو حیدرآباد میںامراض قلب کے جدید اسپتال کاافتتاح کردیا۔اس موقع پربلاول بھٹوزرداری اور وزیراعلیٰ سندھ نے این آئی سی وی ڈی کے مختلف شعبوں کا دورہ کیا،وزیرصحت سندھ سکندرمیندھرو،وزیربلدیات جام خان شور،پیپلزپارٹی کے رہنمااور دیگراعلیٰ حکام بھی ان کے ہمراہ تھے۔ بلاول بھٹوزرداری نے کہاکہ سندھ میں این آئی سی وی ڈی کا یہ تیسرا اسپتال ہے،اب سندھ کے ہر شخص کو گھر کے قریب دل کا علاج میسر ہوگا۔انہوں نے کہاکہ این آئی سی وی ڈی میں بالکل مفت علاج ہورہاہے،این آئی سی وی ڈی کسی بھی انٹرنیشنل اسپتال کا مقابلہ کرسکتاہے۔بلاول بھٹو زرداری نے تقریب سے خطاب میں کہا حیدرآباد میں شعبہ امراض قلب کا قیام انتہائی ضروری تھا کیونکہ یہاں صرف حیدرآباد شہر کے ہی نہیں قرب و جوار سے بھی دل کے مریض آتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ این آئی سی وی ڈی پہلے صرف کراچی میں ہوتا تھا اب سندھ کے بہت سارے شہروں میں ہے۔انہوں نے کہاکہ سندھ میں قائم ہونے والے شعبہ امراض قلب سے صرف سندھ کے عوام نہیں بلکہ پورے ملک کے عوام فائدہ اٹھاسکتے ہیں۔بلاول بھٹوزرداری نے کہاکہ اس مرض کے علاج پر دنیا بھر میں پچاس سے ساٹھ لاکھ روپے تک خرچ آتا ہے جبکہ این آئی سی وی ڈی کے ذریعے سندھ میں امراض قلب کا علاج بالکل مفت کیا جارہا ہے۔وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہاکہ سندھ کے ہر ضلع میں این آئی سی وی ڈی کا سیٹلائٹ سینٹر بنائیں گے۔ انھوں نے کہاجس طرح این آئی سی وی ڈی میں معالجین ذمہ داریاں سرانجام دے رہے ہیں دیگر ڈاکٹروں کو بھی اسی طرح اپنی ذمہ داری کا احساس کرنا چاہئے۔

مزید پڑھیں  قصور :4سالہ بچی کو اغوا کرنے کی کوشش ناکام بنا دی گئی
دوستوں سے شئیر کریں