فاروق ستار کی پی ایس پی میں شمولیت۔۔۔ ؟ ایم کیو ایم پاکستان کے سابق سربراہ نے خاموشی توڑتے ہوئے بڑا اعلان کر دیا

کراچی (ویب ڈیسک) ایم کیو ایم پاکستان پی آئی بی کے سربراہ فاروق ستار نے کہا ہے کہ وفاداریاں تبدیل کرانے کا عمل بہت شدت کے ساتھ شروع کیا گیا ہے، یہ تاثر دیا جارہا ہے ایم کیو ایم کے اندرونی اختلاف کی وجہ سے ایم پی ایز جارہے ہیں۔مرجاؤں گا پی ایس پی میں نہیں جاؤں گا۔


پی آئی بی میں علی الصبح پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دن رات پی ایس پی کے لوگ فون پر دھمکیاں دیتے اور بلاوا بھی بھیجتے ہیں۔فاروق ستار نے کہا کہ کارکنوں میں پراپیگنڈا کیا جارہا ہے کہ فاروق ستار ایم پی ایز اور ایم این ایز کو خود پی ایس پی بھجوا رہے ہیں،ہمیں زبردستی انتخابی سیاست سے دور کیا جا رہاہے۔میں مر جاؤں گا مگر پی ایس پی یا کسی اور جماعت میں نہیں جاؤں گا۔انہوں نے کہا کہ نشاط ضیاء کے بارے میں میڈیا پر چل گیا کہ آج وہ پی ایس پی جوائن کررہے ہیں،نشاط ضیاء میرے ساتھ کھڑے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ کراچی میں شفاف انتخابات کرانےکادعویٰ غلط ہے۔ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار نے کہا ہے کہ مر جاؤں گا لیکں پی ایس پی یا کسی بھی سیاسی جماعت میں نہیں جاؤ ں گا۔ ایم کیو ایم اور پتنگ کو سیاست سے باہر رکھنے کی سازش ہو رہی ہے ۔ ہم نے اپنے قائد کی قربانی تک دیدی ہے۔ اب ہمارے صبر کو مزید نہ آزمایا جائے۔ پی ایس پی والے ملاقات کی دعوت اور دھمکیاں دے رہے ہیں۔ ہمیں بتا دیا جائے تو ہم پی ایس پی ، پی ٹی آئی اور پیپلز پارٹی کے

مزید پڑھیں  2019 main iPhone ki back par 3d Sensors

لیئے راستہ چھوڑ دیں گے۔ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار کا کہنا تھا کہ شفاف انتخابات کرانے کا دعویٰ کراچی کی حد تک غلط ہے ۔جان سے مارنے اور نقصان پہنچانے کی دھمکیاں دیکر ہمارے اراکین اسمبلی کی وفاداریاں تبدیل کرائی جارہی ہیں۔ پریشر کے باوجود ایم کیو ایم نہ چھوڑنے والے ایم پی ایز قابل ستائش ہیں۔ انہوں نے چیف جسٹس اور آرمی چیف سے اپیل کی کہ کراچی کا مینڈیٹ چھیننے کی کوششوں کا نوٹس لیں۔دوسری جانب خبر کے مطابق ایم کیوایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہاہے کہ اگر ہماری آپس کی کھینچا تانی میں پتنگ کوکوئی نقصان پہنچے تو میں خود سربراہی سے پیچھے ہٹ جاؤں گا۔گزشتہ روز پی آئی بی میں کے ایم سی گراؤنڈ میں ڈسٹرکٹ ایسٹ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق ستار نے کہاکہ میں نے فارمولا دیا تھا ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی اور میں مل کر تمام معاملات کو دیکھتے ہیں اور 2018کے انتخابات میں بھرپور کامیابی حاصل کرتے ہیں اور کہا تھا کہ دونوں جانب کی رابطہ کمیٹیاں ختم کریں اور ہم دونوں بیٹھتے ہیں اور تمام کو عوام اور کارکنان میں بھیجتے ہیں اور عام انتخابات کی بھرپور تیاری کرتے ہیں۔فاروق ستار نے کہا کہ مصطفی کمال جو کہہ رہے ہیں کہ مہاجروں کی سیاست اور ایم کیوایم جب تک ختم نہیں ہوگی تو ترقی نہیں ہوگی تو میں یہ کہتا ہوں کہ جب تک جناح کا پاکستان موجود ہے تب تک ایم کیوایم پاکستان بھی رہے گی اور پاکستان کی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کرتی رہے گی۔(ف،م)

مزید پڑھیں  کاش میں پنجابی نہ ہوتا کیونکہ۔۔۔۔ چیف جسٹس ثاقب نثار نے کالا باغ ڈیم کیس کی سماعت کے دوران انوکھی خواہش کر ڈالی


دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments