’مسلم لڑکیاں شادی کے بغیر مردوں سے تعلقات قائم کریں تو۔۔۔‘ مسلم سکالر نے ایسی بات کہہ دی کہ مغربی دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا

مغربی دنیا میں شادی کے بغیر جنسی تعلق معمول کی بات بن کر رہ گیا ہے اوران ممالک میں مقیم مسلمان بھی اس خباثت کی زد میں آ رہے ہیں۔ ایسے میں ایک آسٹریلوی سکالر نے مسلم لڑکیوں کے شادی کے بغیر جنسی تعلق قائم کرنے کے متعلق ایسی بات کہہ دی ہے کہ بے راہ روی کی انتہاءکو پہنچی مغربی دنیا میں ہنگامہ برپا ہو گیا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق سڈنی کے مبلغ نسیم عابدی نے کہا ہے کہ ”اگر مسلمان لڑکیاں شادی کے بغیر جنسی تعلق قائم کریں تو ان کے محرم مرد بھی روزِ محشر اس پر جواب دہ ہوں گے۔“ انہوں نے مسلمان مردوں کو ہدایت کی ہے کہ محض تعلیم مکمل کرنے کے جواز پر لڑکیوں کی شادیاں تاخیر کا شکار مت ہونے دیں اوراپنی زیرکفالت لڑکیوں کی جلد شادی کریں تاکہ وہ گناہ سے بچ سکیں۔نسیم عابدی کا کہنا تھا کہ ”جو لڑکیاں یونیورسٹی کی تعلیم حاصل کرنے کے لیے شادی نہیں کرتیں، یونیورسٹی جا کر ان کے ناجائز جنسی تعلق استوار کرنے کے امکانات انتہائی زیادہ ہو جاتے ہیں۔ میں یہ نہیں کہتا کہ خواتین تعلیم حاصل نہ کریں، اس میں کچھ غلط نہیں ہے لیکن اس کو جواز بنا کر ان کی شادی میں تاخیر کرنا غلط ہے۔اگر وہ ایسی صورت میں گناہ کی مرتکب ہوتی ہیں تو ان کے محرم مرد بھی اس پر جواب دہ ہوں گے۔

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  یورپ میں کبھی نہ ڈوبنے والے جہاز تیار