مفت آئسکریم نہ کھلانے پر ٹریفک وارڈن نے سائیکل سوار کا چالان کر دیا

لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 11 اپریل 2018ء): لاہورمیں گڑھی شاہو سیکٹر کے علاقہ کوئین میری کالج کے باہر ٹریفک وارڈن نے سائیکل پر آئسکریم فروخت کرنے والے فیصل آباد کا رہائشی شیر محمد کا مُفت آئسکریم نہ کھلانے پر چالان کر دیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق چالان چٹ پر سائیکل کی جگہ موٹر سائیکل لکھ کر اسے اپلائیڈ فار قرار دے دیا ۔ ٹریفک وارڈنز نے شیر محمد سے آئسکریم لی اور پیسے دینے سے انکار کر دیا۔

مزید پڑھیں  شاہ محمودقریشی کے صاحبزادے کے دعوت ولیمہ میں عمران خان اور جاوید ہاشمی اکھٹے ہوگئے۔۔۔کپتان نے ایسا اقدام اٹھا لیا کہ جاوید ہاشمی

شیر محمد کے اصرار پر ٹریفک وارڈن بلال احمد نے اس کا 2 سو روپے کا چالان نمبر 18345 کاٹ دیا اور سائیکل کو موٹر سائیکل ظاہر کر کے اس پر اپلائیڈ فار کوڈ لگا دیا ۔ یہی نہیں وارڈنز نے سائیکل والے آئسکریم فروش کی جیب سے زبردستی شناختی کارڈ بھی نکال کر قبضے میں لے لیا اور اسے چالان کی رقم جمع کروانے کے بعد شناختی کارڈ دینے کا کہا جس پر شیر محمد نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ٹریفک وارڈنوں کو آئسکریم مُفت نہ دینے پر اس کا چالان کیا گیا جو کہ سراسر ناانصافی ہے۔ شہری نے چیف ٹریفک آفیسر رائے اعجاز سے اپیل کی کہ متعلقہ وارڈنز کے خلاف کارروائی عمل میں لا کر میرا شناختی کارڈ واپس دلوایا جائے۔

مزید پڑھیں  نیب کی تحقیقات کا ڈر، پنجاب حکومت کا قائداعظم سولر پارک فوری فروخت کرنے کا فیصلہ

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments