’پاکستانی ایجنسیاں اب ہمارے ملک میں۔۔۔‘ افغانستان نے اب پاکستان پر ایسا الزام لگادیا کہ پاکستانی بھی اپنا سر پکڑ کر بیٹھ جائیں گے

ج تک پاکستان میں ہونے والی دہشت گردی کی زیادہ تر کارروائیوں کے تانے بانے افغانستان کی سرزمین سے ملتے پائے گئے ہیں لیکن الٹا چور کوتوال کو ڈانٹے کے مصداق افغانستان اپنے ہاں دہشت گردی کا ذمہ دار پاکستان کو قرار دیتا آ رہا ہے حالانکہ آدھے سے زیادہ افغانستان پر اس وقت بھی طالبان کاکنٹرول ہے۔ اب مودی کی زبان بولنے والی افغان حکومت نے پاکستان پر ایک ایسا الزام عائد کر دیا ہے کہ ہر سننے والا سرپکڑ کر بیٹھ جائے گا۔ افغان نیوز چینل ’ٹولونیوز‘ کی رپورٹ کے مطابق افغانی وزارت دفاع نے کہا ہے کہ ”افغانستان میں موجود داعش کے شدت پسندوں کی قیادت پاکستان کر رہا ہے۔ ان شدت پسندوں کی اکثریت کا تعلق آفریدی اور اورکزئی قبائل سے ہے جو پاکستان میں آباد ہیں۔ اس کے علاوہ ان میں تاجکستان، ازبکستان اور چیچنیا کے شدت پسند بھی شامل ہیں۔“

مزید پڑھیں  چند ماہ کے اندر اندر نجیب رزاق کے ملائیشیا اور شریفوں و زروالوں کے پاکستان میں تبدیلی کیسے آ گئی ؟ یہ شاندار تحریر ملاحظہ کیجیے

افغان وزارت دفاع کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ”افغانستان کے شمالی علاقے میں جمع ہونے والے داعش کے شدت پسندوں کو ہیلی کاپٹروں کے ذریعے اسلحہ و دیگر امداد پہنچانے کی اطلاعات بھی موصول ہوئی ہیں، اس کے علاوہ شدت پسندوں کو بھی ہیلی کاپٹروں کے ذریعے اس علاقے میں اتارا جا رہا ہے، ان ہیلی کاپٹروں پر کوئی ایسا نشان یا علامت موجود نہیں ہوتی جن سے ان کی شناخت کی جا سکےافغان وزیرداخلہ ویس احمد برمک کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ ”ہیلی کاپٹروں کے داعش کو امداد پہنچانے کی اطلاعات تو ملی ہیں لیکن ان ہیلی کاپٹروں کی شناخت نہیں ہو سکی کہ یہ کس ملک کے تھے۔ ہم وزارت دفاع اور نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سکیورٹی کے ساتھ مل کر اس کے متعلق شواہد اکٹھے کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔“واضح رہے کہ گزشتہ دنوں مشرق وسطیٰ کے لیے روس کے نمائندے زیمیر کیبولوف نے انکشاف کیا تھا کہ ”افغانستان میں داعش کے 10ہزار سے زائد شدت پسند جمع ہو چکے ہیں اور ان کی تعداد میں روزانہ کی بنیاد پر اضافہ ہو رہا ہے۔ یہ اب تک اتنی طاقت حاصل کر چکے ہیں کہ لڑائی کے لیے پوری طرح تیار ہیں۔“ اس انکشاف پر افغان حکومت سے جب کچھ اور نہ بن پایا تو اس کا ملبہ بھی پاکستان پر ڈال دیا۔

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments