پاکستان تحریک انصاف کی خواتین کاعائشہ گلالئی سے رابطہ ۔۔۔عائشہ گلالئی نے بھی اہم فیصلہ کرلیا:عمران خان کےلئے نئی مشکلات کھڑی ہوگئیں

لاہور(نیوزڈیسک) چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی جانب سے پارٹی کا خواتین ونگ فعال نہ کرنے کی وجہ سے پی ٹی آئی کی خواتین نے پی ٹی آئی کو خیر باد کہنے پر غور شروع کردیا ہے اور پی ٹی آئی کی ان دلبرداشتہ خواتین نے پی ٹی آئی کی منحر ف ہو کر اپنی نئی جماعت بنانے والی ایم این اے عائشہ گلا لئی کے ساتھ رابطے کرنے شروع کردئیے ہیں جبکہ پی ٹی آئی کا خواتین ونگ فعال نہ ہونے کی وجہ سے ہی گزشتہ روز متحدہ اپوزیشن کے مال روڈ کے احتجاجی جلسے میں بھی پی ٹی آئی کی خواتین کی شرکت نہ ہونے کے برابر تھی حالانکہ خواتین پی ٹی آئی کی تعداد کے حوالے سے ہر جلسے میں ایک اہم رول ادا کیا کرتی ہیں ۔تفصیلات کے مطابق تقریبا ڈیڑھ سال ہونے کو ہے اور آج سے ڈیڑھ سال قبل پارٹی کے انٹرا پارٹی الیکشن کے وقت پارٹی کے تمام ونگز کو بھی ختم کردیا گیا تھا لیکن اتنا عرصہ گزر جانے کے باوجود تاحال خواتین ونگ سمیت کسی بھی ونگ کو بحال نہیں کیا گیا پی ٹی آئی کا خواتین ونگ شروع سے ہی ایک اہم ونگ رہا ہے کیونکہ اس ونگ کو بھی مردوں کے برابر جیسی اہمیت حاصل ہے کیونکہ پی ٹی آئی ہی وہ واحد جماعت ہے کہ جس کی خواتین دوسری جماعتوں کی نسبت زیادہ متحر ک و فعال دکھائی دیتی ہیں ۔اس حوالے سے جب پی ٹی آئی کی متحرک خواتین سے رابطہ کیا گیا توان کا کہنا تھا کہ پارٹی کے کچھ لیڈر نہیں چاہتے کہ خواتین ان کے شانہ بشانہ کام کریں ان کی اس چھوٹی سوچ کی وجہ سے خواتین ونگ مکمل طور پر تباہ ہو چکا ہے جب ہمیں کام کرنے کے لئے عہدے نہیں دئیے جائیں گے تو پھر ہم نے سیاسی طور پر اپنے آپکو زندہ رکھنے کے لئے عائشہ گلہ لئی کی جماعت سے رابطہ تو کرنا ہے اور ویسے بھی عائشہ گلا لئی ایک لبرل اور پروگریسو سوچ کی حامل خاتوں ہیں جو خواتین کے لئے کچھ کرنا چاہتی ہیں
دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  میر علی میں دھماکہ چھ افراد شہید ،متعدد زخمی