پتلون پہنتے وقت ہونے والی  ایسی خطرناک غلطی جو جان لیوا ثابت ہو سکتی ہے،کہیں  آپ بھی تو یہ عمل نہیں کرتے ؟جانئے اس خبر میں

سیؤل(ویب ڈیسک) ہماری شہری زندگی میں پتلون ایک عام پہناوا ہے اور پتلون کےساتھ بیلٹ تقریباً لازم و ملزوم ہے۔بیلٹ لگانے کے کئی نقصان بھی ہیں اور عام طور پر ہر روز ہم میں سے ہزاروں لوگ بیلٹ پہنتے وقت ایسی غلطی بھی کرتے ہیں جو ان کی زندگی کو خطرے میں ڈال دیتی ہے؛ اور وہ غلطی ہے بیلٹ کو انتہائی سختی سے باندھنا۔

 

جنوبی کوریا کے ماہرین نے اپنی جدید تحقیق میں ثابت کیا ہے کہ بیلٹ سختی سے باندھنے سے پیٹ کے عضلات کے کام کرنے کا طریقہ بدل جاتا ہے، پیٹ کے اندر موجود شریانوں پر دباؤ بڑھ جاتا ہے اور یہ دباؤ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ بڑھتا جاتا ہے جو پیٹ کے کئی امراض کا باعث بن سکتا ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ کمر پر سختی سے بیلٹ باندھنے سے ریڑھ کی ہڈی میں اکڑن پیدا ہونے کا خطرہ ہوتا ہے۔ اس کے ساتھ ہی پیر کے جوڑوں خاص طور پر گھٹنوں پر دباؤ بڑھ جاتا ہے جو کہ جوڑوں کے مستقل درد کی وجہ بن سکتا ہے۔اسی لئے ماہرین کا کہنا ہے کہ پینٹ پہننے والے افراداپنی زندگی کو خطرے میں نہیں ڈالنا چاہتے تو کوشش کریں کہ وہ ضرورت کے بغیر بیلٹ نہ لگائیں۔دوسری جانب کیا آپ نے کبھی غور کیا ہے کہ جینز کی پتلون کی جیبوں پر بنے یہ چھوٹے بٹن کس مقصد کے لیے ہوتے ہیں؟۔rivets نامی ان بٹنوں کو آپ نے دیکھا تو ہوگا مگر کبھی سوچا کہ اس کا فائدہ کیا ہوتا ہے؟۔درحقیقت یہ بٹن ایسی جگہ پر لگے ہوتے ہیں جہاں پتلون کو اتارنے چڑھانے کے دوران کافی کھچاﺅ کا سامنا ہوتا ہے، یہی وجہ ہے کہ یہ کپڑے کو پھٹنے سے روکنے کا کام کرتے ہیں۔لیکن اس کی تاریخ بہت دلچسپ ہے بلکہ درحقیقت اسی کی وجہ سے جینز کی پتلون وجود میں آئی۔1870 کی دہائی میں مزدور طبقہ ہی ایسی پتلونیں استعمال کرتا تھا جو بہت جلد پھٹ جاتی تھیں۔اسی کو دیکھتے ہوئے ایک مزدور کی بیوی نے ایک درزی کے پاس جاکر درخواست کی کہ وہ سخت کپڑے کی ایسی پتلون تیار کردے جو آسانی سے پھٹ نہ سکے۔جیکب ڈیوس نامی اس درزی نے پتلون کے ان حصوں پر یہ دھاتی بٹن لگائے جہاں سب سے زیادہ دباؤپڑتا تھا جیسے جیبوں کے کونے وغیرہ، تاکہ کپڑا کھنچ کر پھٹے نہیں۔یہ پتلونیں مارکیٹ میں آتے ہی ہٹ ہوگئیں اور جیکب ڈیوس کو ایک کاروباری شراکت دار لیوی اسٹروس مل گیا اور ان دونوں نے 1873 میں اس ڈیزائن کو رجسٹرڈ کرالیا اور 1960 کی دہائی میں ان ٹراﺅزر کو جینز کہا جانے لگا۔

مزید پڑھیں  Qabar Mai Azab Kaise Hoga, Sab Janain Is Video Mai...

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments