پیر حمید الدین نے حکومت کا بڑا مسئلہ حل کر کے سب کوخوش کر دیا

لاہور(ویب ڈیسک)پیر حمید الدین سیالوی کی جانب سے ختم نبوت ؐ کانفرنس کا التوا، حکومت اور پیر آف سیال کے مابین راضی نامہ ہو چکا، سیاسی حلقوں میں چہ میگوئیاں، ہماری کسی سے ناراضگی نہیں مسئلہ ختم نبوت ؐ پر کانفرنس ملتوی کی گئی ہے جلد اعلان کیا جائے گا، پیر سیالوی کے قریبی ذرائع۔تفصیلات کے مطابق پیر حمید الدین سیالوی کی جانب سے آج ہونیوالی ختم نبوتؐ کانفرنس ملتوی کر دی گئی تھی جس پر سیاسی حلقوں میں چہ میگوئیاں جاری ہیں کہ حکومت نے پیر آف سیال شریفکو منا لیا ہے ۔ واضح رہے۔کہ حکمران جماعت ن لیگ کی جانب سے کہا گیا تھا کہ وہ پیر حمید الدین سیالوی کو کانفرنس سے پہلے منا لیں گے۔ کانفرنس کے ملتوی ہونے کے اعلان کے بعد سیاسی حلقوں میں ہلچل پیدا ہوگئی ہے اور کہا جا رہ ہے کہ ن لیگ پیر حمید الدین سیالوی کو منانے میں کامیاب ہو گئی ہے جبکہ میڈیا رپورٹس کے مطابق دوسری جانب پیر حمید الدین سیالوی کے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ ہماری کسی سے ناراضگی نہیں ختم نبوتؐ کانفرنس کے انعقاد کا اعلان جلد کر دیا جائے گا۔ واضح رہے کہ سانحہ قصور کے بعد ملکی حالات میں پیدا ہونے والی ہلچل کے پیشِ نظر پیر حمید الدین سیالوی نے داتا دربار پر دھرنا ملتوی کر دیا ہے۔ نئی تاریخ کا اعلان مشاورت سے کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔دوسری جانب، تحریک انصاف بھی ختم نبوت کے مسئلے پر متحرک ہو گئی ہے اور چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نےجہانگیر ترین کو اس سلسلے میں خصوصی ٹاسک دیدیا ہے۔ذرائع کے مطابق، جہانگیر ترین کی قیادت میں پی ٹی آئی کا وفد کل پیر حمید الدین سیالوی سے اہم ملاقات کرے گا۔ ملاقات میں ختم نبوت تحریک سے متعلق تبادلہ خیال ہو گا۔ تحریک انصاف کا کہنا ہے کہ ختم نبوت ایمان کا اہم ترین جزو ہے اور اس پر کوئی سمجھوتہ قابل قبول نہیں۔یاد رہے کہ سیال شریف کے سجادہ نشین پیرحمید الدین سیالوی نے حکومت کیخلاف دھرنا دینے کی تیاری شروع کردی ہے،9جنوری کوداتا دربار پرحاضری کو دھرنے میں تبدیل کردیا جائے گا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سیال شریف کے سجادہ نشین پیر حمید الدین سیالوی نے وزیرقانون پنجاب راناثناء اللہ کے استعفے کیلئے بھرپوراقدام اٹھانے کافیصلہ کیاہے۔نجی ٹی وی ذرائع کے مطابق پیر نظام الدین نے بتایاکہ پنجاب حکومت کیخلاف احتجاجی دھرنے کی تیاری شروع کردی ہے۔ پیرحمیدالدین سیالوی نے فیصلہ کیاہے کہ وزیرقانون پنجاب کے استعفے کیلئے دھرنا دیاجائے گا۔تاہم علماء مشائخ کی 9جنوری کوداتادربار حاضری کو دھرنے میں تبدیل کرنے کابھی فیصلہ کیاگیاہے۔دھرنا وزیرقانون پنجاب راناثناء اللہ کے استعفے تک جاری رہے گا۔جبکہ دوسری جانب ایک سو گدی نشین اور مشائخ نے رانا ثنا اللہ کے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر قانون پنجاب اگر مستعفیٰ نہ ہوئے تو لاکھوں مریدین کے ساتھ سڑکوں پر نکلیں گے۔
دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  نادرا کا ڈیٹا بینک نا مکمل ایف بی آر کا بڑا انکشاف