پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) کے درمیان بیک ڈور معاملات طے۔۔۔چند روز بعد ملکی سیاست میں کیا تبدیلی رونما ہو گی؟ بڑی بریکنگ نیوز آ گئی

ملتان (ویب ڈیسک ) پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی درپردہ (ن) لیگ سے ملی ہوئی ہے اور میثاق جمہوریت درحقیقت مک مکا کا حصہ ہے۔ملتان میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پنجاب میں پی ٹی آئی

اور مسلم لیگ (ن) کے درمیان مقابلہ ہے، پنجاب کے سیاسی میدان میں کوئی اور جماعت نہیں ہے، پنجاب والے زرداری کی پیپلزپارٹی کو ووٹ دینے کے لیے تیار نہیں اور بلاول بااختیار پیپلزپارٹی کا چیئرمین نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ آصف زرداری نے بی بی شہید کے قریبی ساتھیوں کوچن چن کر پارٹی سے نکالا، پیپلزپارٹی درپردہ (ن) لیگ سے ملی ہوئی ہے اور میثاق جمہوریت درحقیقت مک مکا کا حصہ ہے، تحریک انصاف کو یہ نیا مک مکا قبول نہیں کیونکہ ہمیں ایسا میثاق نہیں چاہیے جو کرپٹ لوگوں کو تحفظ دے، صرف آئین کی حکمرانی کے لیے نئے میثاق پر بات ہوسکتی ہے۔شاہ محمود قریشی نے پیپلزپارٹی کے چیئرمین کو بیٹا پکارتےہوئے کہا کہ بلاول بیٹا میثاق جمہوریت قومی اتفاق رائے سے ہو تو اچھی بات ہے، میثاق جمہوریت سے ملک میں آئین کو تحفظ، قانون کی حکمرانی اور سیاسی استحکام ہو تو اچھی سوچ ہے۔پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھاکہ کوئی ایسا میثاق جموریت جس میں کہا جائے کہ نیب کے دانت نکال دو اور ناخن اتا ردو، ہمیں قبول نہیں، ہماری اطلاعات کے مطابق پیپلزپارٹی اور (ن) لیگ میں ایک نیا مک مکا پس پردہ چل رہاہے، نئی گفتگو میں نیا انتطام اور نیا مک مکا شروع ہے، (ن) لیگ اور پیپلزپارٹی عوام سے دھوکا کررہے ہیں، یہ دونوں جماعتیں ایک طرف میدان میں مقابلہ کررہےہیں اور درپردہ مذاکرات کررہے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ شہبازشریف نے مسلم لیگ (ن) کی سوشل میڈیا کی ٹیم کوفارغ کردیا ہے، انہوں نے نوازشریف کے بیانیے کو بھی فارغ کردیا ہے۔(ز،ط)

دوستوں سے شئیر کریں