چیف جسٹس کا ڈیم تعمیر فنڈ : کراچی کے ایک ادارے نے خطیر رقم جمع کروا دی، پورے ملک کے طبقہ امراء لیے شاندار مثال قائم

کراچی(ویب ڈیسک) ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپے کی حالیہ غیر معمولی کمی پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسلم لیگ نون نے اپنے دور حکومت میںڈالر کی قدر کو برقرار رکھنے کے کئے تقریباً 7سے 8ارب ڈالر حکومتی خزانے سے مارکیٹ میں منتقل کئے

تاکہ روپے کی قدر کو برقرار رکھا جاسکے۔مقامی کرنسی کے لئے یہ مصنوعی اقدام درست نہیں تھا کیونکہ اس طرح کے مصنوعی اقدامات کا اُلٹا اثر پڑتا ہے جو روپے کی حالیہ بے قدری کے شکل میں ہمارے سامنے آیا۔ا گر پچھلے 5 سال میں ڈالرکی قدر کو مارکیٹ پر مبنی رکھا گیا ہوتا تو صورت حال اتنی بری نہ ہوتی جتنی اس وقت ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے دورے کے موقع پرخطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر بزنس مین گروپ کے چیئرمین و سابق صدر کراچی چیمبر سراج قاسم تیلی، وائس چیئرمین بی ایم جی و سابق صدر ہارون فاروقی، کراچی چیمبر کے قائمقام صدر عبدالباسط عبدالرزاق، سابق صدور اے کیو خلیل اور شمیم احمد کے علاوہ جنید اسماعیل ماکڈا، غنی عثمان اور کے سی سی آئی کی مینیجنگ کمیٹی کے اراکین بھی موجود تھے۔ ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والانے کراچی کی تاجر وصنعتکار برادری سے اپیل کی کہ وہ ملک میں ڈیموں کی تعمیر میں اپنا حصہ ڈالیں کیونکہپاکستان کو اس وقت پانی کے بحران کے سنگین مسئلے کا سامنا ہے جس سے اس ملک کا ہر شخص ہی متاثر ہوگا جبکہ اس سنگین صورت حال سے نمٹنے کا واحد حل ڈیموں کی تعمیر ہے۔

مزید پڑھیں  کوہاٹ:ڈاکٹر عاصمہ کے قتل کے پیچھے کیا حقائق ہیں۔۔۔ساری کہانی منظر عام پر آگئیں

ڈپٹی چیئرمین کی اپیل کے جواب میں چیئرمین بی ایم جی سراج قاسم تیلی نے کراچی چیمبر کے 22,000 ممبران کی جانب سے چیف جسٹس آف پاکستان کے ڈیموں کی تعمیر کے سلسلے میں قائم کئے گئے فنڈ میں 2 کروڑ روپے کا عطیہ دینے کا اعلان کیا جبکہ کراچی چیمبر کے تمام افسران اور دیگر اسٹاف بھی اپنی ایک دن کی تنخواہ اس فنڈ میں جمع کرائیں گے۔ انھوں نے کہا کراچی چیمبر کی قیادت چیف جسٹس آف پاکستان کی کراچی رجسٹری آمد پر چیک پیش کرے گی۔سراج تیلی نے تاجر و صنعتکار برادری سے اپیل کی کہ وہ اس عظیم قومی فریضے میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔سلیم مانڈوی والا نے ڈیموں کی تعمیر کے سلسلے میںکراچی چیمبر کے عطیات کو سراہتے ہوئے ملک بھر کی دیگر ٹریڈ باڈیز اور نجی اداروںپر زور دیا کہ و ہ دل کھول کر سپریم کورٹ کے ڈیم فنڈ میں رقوم جمع کرائیں۔انھوں نے ملک بھر کے چیمبرز اور ٹریڈ ایسوسی ایشنز کو مشورہ دیا کہ وہ تجارت و صنعت کو درپیش مسائل کے حل کے لئے سینیٹ اور قومی اسمبلی کی اسٹینڈنگ کمیٹیوں سے رابطے بڑھائیں جبکہ قوانین میں بہتری لاتے ہوئے ملکی معیشت کو مضبوط کرنے کے سلسلے میں انھوں نے کراچی چیمبر سے بھی تجاویز طلب کیں۔(ش۔ز۔م)

مزید پڑھیں  ملزمان اور بھی ہیں انہیں گرفتار کیوں نہیںکیا گیا۔۔۔اسماء کے ملزم کے بعد کے پی کے پولیس پر انگلیاںاٹھ گئیں

دوستوں سے شئیر کریں