ہم سوئے ہوئے تھے، مین گیٹ پر اچانک سخت فائرنگ ہوئی ، ہم نے اٹھ کر دیکھا تو ۔ ۔ ۔“پشاور حملے کا عینی شاہد بھی میدان میں آگیا

پشاور کے زرعی سیکریٹریٹ کے ہاسٹل میں دہشتگردوں کے حملے کا ایک عینی شاہد بھی میدان میں آگیا جس نے بتایاکہ وہ بھی اندر پھنس گیا تھا ، فائرنگ شروع ہوتے ہی ہاسٹل میں موجود طلباءنے ایک طرف بھاگناشروع کردیا۔
جیونیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے 25سالہ عارف اللہ نے بتایاکہ ’ہم اندر سوئے تھے کہ فائرنگ کی آواز آئی ، ہم نے معمول کی کوئی فائرنگ سمجھی لیکن پھر اچانک مین گیٹ پر سخت فائرنگ ہوئی ،ایک طرف بھاگناشروع کیا ، سات سے آٹھ فٹ اونچی دیوار عبور کی اور دوزخمی ساتھیوں کو بھی اٹھایا۔ ایک سوال کے جواب میں اس نے بتایاکہ یہاں ڈپلومہ کے کورسز ہورہے تھے اور تین سالہ ڈپلومہ کے 24کے قریب لوگ موجود تھے جبکہ بیشترلوگ عیدمیلادالنبیﷺ کی چھٹی کی وجہ سے اپنے آبائی علاقوں میں چلے گئے ، یہاں صرف ایک سیکیورٹی گارڈ تھا، کوئیک ریسپانس فورس کے اہلکار 9بجے کے لگ بھگ آتے ہیں اور وزٹ کرکے چلے جاتے ہیں‘۔

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  Ch Nisar Removed from PMLN Parliamentary Board