Amir ne dil ki bat bata di

قومی ٹیم کے فاسٹ باولر محمد عامر نے کہا ہے کہ چیمپیئنز ٹرافی کے فائنل میں ویرات کوہلی کو کرائی گئی لگاتار دو گیندوں نے انگلینڈ میں میری ساکھ بدل کر رکھ دی ۔ان کا کہنا ہے کہ بحثیت باولر اپنی کارکردگی سے مطمئن ہوں ، تھوڑا بدقسمت بھی رہا کہ میری گیند پر کیچز بھی ڈراپ ہوئے لیکن کارکردگی کا سلسلہ جاری رہا تو میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ میری کارکردگی متوازن رہی۔
کرکٹ ویب سائٹ کرک انفو سے گفتگو کرتے ہوئے محمد عامرنے کہا کہ چیمپیئنز ٹرافی کے فائنل میں ویرات کوہلی کو کیچ ڈراپ ہونے کے باوجود اگلی ہی گیند پر دوبارہ آوٹ کرنے کے حوالے سے سوال پر عامر نے کہا کہ ان دو گیندوں نے برطانیہ میں میری ساکھ ہی بدل کر رکھ دی، کیچ ڈراپ ہونے کے بعد اگلی گیند پر کوہلی کا دوبارہ آوٹ ہونا بڑی کامیابی تھی کیونکہ ہم وہیں پر 60 سے 70 فیصد میچ جیت چکے تھے کیونکہ بھارتی ٹیم کوہلی پر بہت زیادہ انحصار کرتی ہے۔انہو ں نے بتا یاکہ جب کیچ چھوٹا تھا تو مجھے لگا کہ آدھا میچ ہمارے ہاتھ سے نکل گیا کیونکہ مجھے فوراً ہی فخر زمان کا نوبال پر آوٹ ہونا یاد آیا جنہوں نے اس کے بعد سنچری بنا دی تھی لیکن اللہ کا شکر ہے کہ کوہلی اگلی ہی گیند پر آوٹ ہو گئے۔
ان کا کہنا تھاکہ بحیثیت باولر اپنی کارکردگی سے مطمئن ہوں، پانچ سال بعد کم بیک کیا اور تینوں فارمیٹس اور لیگ کھیل رہا ہوں کیونکہ پانچ سال میں کوئی کرکٹ نہیں کھیلی جبکہ فرسٹ کلاس میں بھی بمشکل پانچ میچ کھیلے تھے تو اس لحاظ سے تو میں اپنی کارکردگی سے بہت حد تک مطمئن ہوں۔انہوں نے کہا کہ میں نے پانچ سال کرکٹ کے میدانوں سے دور رہنے کے باوجود ٹیم میں واپسی پر اپنی فٹنس کو برقرار رکھا اور سال میں پاکستان کی جانب سب سے زیادہ اوورز کرانے والے باو¿لرز میں دوسرے نمبر پر رہا۔ اس دوران تھوڑا بدقسمت بھی رہا کہ میری گیند پر کیچز بھی ڈراپ ہوئے لیکن کارکردگی کا سلسلہ جاری رہا تو میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ میری کارکردگی متوازن رہی۔

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  جب تک کوچ ہوں کپتان سرفراز ہی رہے گا