urdu tv online

kamyabi ki kahani

سکواش کی دنیا میں تین مرتبہ عالمی چیمپئین بننے والے پاکستان کے سابق کھلاڑی قمر زمان نے اپنی زندگی کے دلچسپ اور سبق آموز واقعے سے پردہ اٹھا دیا ہے۔

قمر زمان نے ایک انٹرویو میں بتایا کہ ان کے پاس نئی گیند خریدنے کیلئے پیسے نہیں ہوتے تھے اور وہ کلب سے پھٹی ہوئی گیندیں لا کر ان پر ٹیپ چڑھا کر گھر میں سکواش کی پریکٹس کرتے تھے جبکہ آج کوئی کھلاڑی پھٹی ہوئی گیند سے کھیلنے کا سوچ بھی نہیں سکتا۔
11 اپریل 1952ءکو کوئٹہ میں پیدا ہونے والے قمر زمان نے 19 برس تک سکواش کی دنیا میں پاکستان کی نمائندگی کی۔ وہ 1975ئ، 1978ءاور 1980ءمیں عالمی چیمپن بنے اور مسلسل 11 برس تک عالمی رینکنگ میں دوسرے نمبر پر رہے۔ وہ تین بار ایشین چیمپئین بھی بنے اور سکواش کے 100 سے زائد بین الاقوامی ایونٹس میں کامیابی حاصل کی۔

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  سپریم کورٹ میں جاکر یہ کام کروں گا۔۔۔دانیال عزیز نے دبنگ اعلان کردیا