Khawateen pr jurmana nahi hoga

ریاض(آن لائن) سعودی عرب میں خواتین کو ٹریفک خلاف ورزیوں کی بعض سزاؤں سے استثنیٰ دینے کی تجویز زیر غور ہے۔ خواتین کی ڈرائیونگ کے امو راو رٹریفک خلاف ورزیوں کے لائحہ عمل میں ترامیم کا بھی تذکرہ ہو گا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق ایسی خلاف ورزیاں جن پر ڈرائیور کو حوالات میں بند کرنے یا گاڑی اپنے قبضے میں لینے کی جو سزائیں مقرر ہیں۔ ان سے خواتین کو مستثنیٰ حاصل ہو گا اوران سے جرمانہ وصول کرنے پر ہی اکتفا کیا جائے گا۔ دریں اثناسعودی شہریوں نے اس اعلان پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کے2 بھاری نقصان ہوں گے۔ پہلا تو یہ کہ بعض خواتین اور لڑکیوں کو ٹریفک خلاف ورزیوں کرنے کی حوصلہ افزائی ہو گی اور دوسرا نقصان یہ ہو گا کہ یہ ایک طرح سے مرد و خواتین کے درمیان امتیاز کے عمل کو راسخ کرے گا۔
مقامی شہریوں نے استثنیٰ کو پوری طرح سے مسترد کر دیالیکن دیگر شہریوں کا کہنا ہے کہ استثنیٰ کا یہ اعلان خواتین اور مردوں کے درمیان تفریق نہیں، استثنیٰ نہایت اہم ہے۔ اس کی بدولت سعودی سماج کی روایات کو تحفظ حاصل ہو گا۔ استثنیٰ کی مخالفت بے معنی ہے۔

مزید پڑھیں  Saudi sarkari mulazmeen ke liye naya hukum
دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments