Saudia me tabdeeli

سعودی عرب کے وزیر انصاف و قانون الشیخ ولید بن محمد الصمعانی نے ملکی تاریخ میں پہلی بار وزارت انصاف میں خواتین کے لیے چار اہم شعبوں میں ملازمت کے مواقع پیدا کرنے کی ہدایت کردی ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق سعودی وزیر انصاف کی ہدایت کے مطابق اتوار 8 ربیع الاول 1439ھ سے خواتین کی بھرتی کیاحکامات پر عمل درآمد کیا جائے گا۔سعودی عرب کی تاریخ میں پہلی بار سرکاری سطح پر وزار قانون و انصاف میں گریڈ آٹھ پر خواتین کے تقرر کا فیصلہ کیا ہے۔ خواتین کو چار اہم شعبوں سوشل ریسرچر، شرعی محققہ، لا ریسرچر اور ایڈ منسٹریشن اسسٹنٹ کے عہدوں پر ملازمت کے حصول کی اجازت ہو گی۔خواتین کا چاروں شعبوں میں سے اپنے متعلقہ شعبے میں کم سے کم ماسٹر ڈگری تک تعلیم ضروری ہے۔ تقرری باقاعدہ مقابلے کے امتحان کے بعد کی جائے گی۔وزارت انصاف کی جانب سے خواتین کی بھرتی کے لیے 8 ربیع الاول 1439ھ کو ادارے کی ویب سائٹ پر باقاعدہ اشتہار جاری کیا جائے گا۔ اس اشتہار کی روشنی میں 12 ربیع الاول تک الریاض، مکہ، جدہ، دمام اور مدینہ منورہ سے خواہش مند خواتین امیداروں کی درخواستیں وصول کی جائیں گی۔سعودی وزیر انصاف الصمعانی کا کہنا ہے کہ خواتین نے ملک میں مختلف شعبوں میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منواہا ہے۔ وزات انصاف میں خواتین تقرری کا مقصد صنف نازک کے لیے اس میدان میں بھی خدمات انجام دینے اور وزارت انصاف کی ملازمتوں سے مستفید ہونے کا موقع فراہم کرنا ہے۔

دوستوں سے شئیر کریں

Comments

comments

مزید پڑھیں  Hamila larki ke sath Shair ne kya kia